اہم خبریں

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے مداحوں کےلئے انتہائی تشویشناک خبر آگئی ۔ پارٹی کے سینئر رہنما اور سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی طبیعت ناساز ہو گئی ۔ نجی ٹی وی چینل 92نیوز کی رپورٹ کے مطابق سپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر کی طبیعت اچانک ناساز ہو گئی ۔ وہ ایک سیمینار میں شرکت کےلئے گئے تھے جہاں انھیں اچانک طبیعت خراب ہونے کی شکایت ہوئی ۔ جس کے




دبئی (مانیٹرنگ ڈیسک)ڈیموں کی تعمیر کےلئے بنائے گئے فنڈز میں نہ صرف پاکستان بلکہ بیرونی ممالک میں مقیم پاکستانیوں کی جانب سے خطیر رقوم جمع کرائے جانے کا سلسلہ جاری ہے ۔ دبئی میں مقیم پاکستانی کمیونٹی نے اس قومی مشن میں


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ بھارت اپنے گریبان میں جھانکے، کشمیر بھارت کے ہاتھ سے نکل چکا ہے، 70سال سے دونوں ممالک میں تنازعات چل رہے ہیں، بھارت رافیل سکینڈل کو دبانے کیلئے ایشو کھڑا کررہا ہے، کشمیریوں کا دل پاکستان کیلئے دھڑکتا ہے۔ وہ پیر کو سینیٹ میں اظہار خیال کر رہے تھے۔ فواد چوہدری نے کہا کہ


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ایشیا کپ کے دو میچز میں بھارت کے ہاتھوں شکست کے بعد کرکٹ کے پنڈتوں نے اپنے تجزیوں اور تبصروں میں اس خوفناک صورتحال کا ذمہ دار کوچ مکی آتھر کو قرار دینا شروع کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے قومی کرکٹ ٹیم کے کو چ مکی آتھر اپنے غیر لچکدار فیصلوں اور پسند اور ناپسند کی بنیاد پر کھلاڑیوں کے چنائو کے باعث بھارت کے ہاتھوں دو متواتر شکستوں کے ذمہ دار قرار دیے جا رہے ہیں۔ کرکٹ کے تجزیہ کاروں کی رائے کے مطابق مکی آتھر نے تجربے




اسلام آباد(نیو زڈیسک)برصغیر کے عظیم افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی زندگی پر بنائی گئی بولی وڈ فلم ‘منٹو’ کو اگرچہ 21 ستمبر کو ہی بھارت سمیت دیگر ممالک میں بھی ریلیز کیا گیا تھا۔ تاہم اطلاعات ہیں کہ اس فلم کو بھارت کے کئی شہروں میں نمائش کے لیے پیش ہی


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) تحریک انصاف کی حکومت نے ملک کو توانائی کے شعبوں میںخود کفیل بنانے کےلئے بڑا قدم اٹھانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ تیل اور گیس کے ذخائر کی دریافت اور ان سے استفادہ حاصل کرکے ملک کو عرب ممالک کے برابر لاکھڑا کرنے کی پالیسی پر غور و غوض شروع ہو گیاہے۔مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس اسلام اباد میں منعقد ہوا جس کی صدارت وزیر اعظم


اسلام آباد(نیوز ڈیسدک)مرد ہو یا خواتین، جب جسمانی وزن بڑھتا ہے تو توند باہر نکلنے لگتی ہے جو شخصیت کو بے ڈول بنا دیتی ہے۔ویسے خواتین کے مقابلے میں مردوں میں توند زیادہ آسانی سے نکل جاتی ہے کیونکہ ان کے جسم میں چربی کا ذخیرہ ہی پیٹ کے اس حصے میں ہوتا ہے جسے ہم توند کہتے ہیں۔تو کیا آپ کی بھی توند نکل آئی ہے ؟ ویسے یہ جان لیں کہ جسم کے اس حصے میں موجود چربی کو گھلانا ہی سب سے مشکل ہوتا ہے۔مگر اس کا حل بھی آپ کے کچن میں ادرک اور پانی کی شکل میں موجود ہے۔جی ہاں ادرک ملا پانی اس حوالے سے بہت زیادہ فائدہ مند ہوتا ہے کیونکہ یہ رانوں، کولہوں اور کمر کے گرد جمع ہونے والی چربی کو گھلاتا ہے۔اس کو بنانے کا طریقہ بھی بہت آسان ہے۔ادرک کے کچھ پتلے ٹکڑے لیں اور ڈیڑھ لیٹر پانی میں شامل کردیں، ویسے دل کرے تو کچھ مقدار میں لیموں کا عرق بھی شامل کیا جاسکتا ہے۔اسے بنانے کے لیے


ملک فارس ( موجودہ ایران ) کا بادشاہ بہت دنوں سے پریشان تھا _یوں تو ہر طرف خوش حالی کا دور تھا ، مگر بادشاہ کی پریشانی کی وجہ اس کی اکلوتی بیٹی شہزادی ثنا تھی _۔ہر باپ کی طرح بادشاہ بھی اپنی بیٹی کی شادی کر کے اپنے فرض سے دوش ہونا چاہتا تھا ، لیکن شہزادی ثنا نے بھی عجیب اعلان کر رکھا تھا کہ جو شخص اس سوالوں کے درست جواب دے گا ، وہ اس سے شادی کرے گی _ آس پاس کی ریاستوں کے کئ شہزادے آئے ، مگر نا کام لوٹ گئے۔اس ملک میں نوجوان طالب علم بھی رہتا تھا ، اس کا نام اعظم تھا _۔اس نے اپنے والد سے کہا کہ وہ بھی اپنی قسمت آزما نا چاہتا ہے _ اعظم کے والد اُستاد تھے اور کئ برسوں سے لوگوں میں علم کی روشنی بانٹ رہے تھے _ ملک فارس کا وزیراعظم ، بڑے بڑے درباری اور شہر کا قاضی بھی ان کا شاگرد تھا _ باپ نے بیٹے کی خواہش دیکھی تو بولے" بیٹا ! اگر تو نا کام لوٹا تو تیرا کچھ نہیں جائے گا ، لوگ کیا کہیں گے کہ ایک استاد کا بیٹا نا کام ہوگیا _۔اعظم اپنے باپ سے کہنے لگا" بابا ! بڑے بڑے شہزادے لوٹ گئے _ اگر میں بھی نا کام ہو گیا تو کیا ہوا ، یہ تو مقابلہ ہے ، جو بھی جیت لے اور شاید وہ خوش نصیب میں ہی ہوں _ "۔آخر باپ کو بیٹے کی ضد ماننی پڑی _ اعظم خوشی خوشی محل کی طرف چل پڑا _۔شہر بھر میں یہ خبر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئ کہ ایک عالم کا بیٹا قسمت آزمانے محل میں چلا آیا ہے _۔مقررہ وقت پر محل لوگوں سے کھچا کھچ بھرا ہوا تھا _ بادشاہ تخت پر بیٹھا تھا _ ملکہ عالیہ بھی محل میں موجود تھیں _ وزیر ، امیر ، درباری ، اور عوام الناس سب دربار میں موجود تھے _۔ آخر شہزادی نے اپنا پہلا سوال کر ڈالا۔ اُس نے شہادت کی انگلی فضا میں بلند کی _۔اعظم نے کچھ دیر توقف کیا اور پھر شہادت والی انگلی کے ساتھ والی اگلی بھی فضا میں بلند کی _ یہ دیکھ کر شہزادی مسکرا اٹھی اورملکہ عالیہ بولی :" شاباش ، اے نوجوان ! تم پہلا مرحلہ کام یابی سے طے کر گئے ہو۔ دوسرے سوال کے لیے شہزادی کرسی سے اٹھی اور ہاتھ میں تلوار لے کر ہوا میں چلانے لگی _ کچھ دیر بعد وہ دوبارہ اپنی نشست پر آکر بیٹھ گئ _بادشاہ سمیت ہر درباری کی نظر اعظم پر تھی _۔اعظم کھڑا ہوا اور اپنی جیب سے قلم نکال کر فضا میں بلند کردیا _۔ شاباش اے نوجوان ! ہم خوش ہوئے _ یہ جواب بھی درست ہے _ "ملکہ عالیہ کی آواز دربار میں ابھری _۔اسی کے ساتھ دربار ، مبارک ہو ، مبارک ہو ، کی آواز سے گونج اٹھا _ْدوسوالات کیا تھے ؟ ان کے جوابات کیا تھے ، اب ہر شخص اس پر غور کر رہا تھا کہ شہزادی نے کیا پوچھا اور اعظم نے کیا جواب دیا ؟ لوگوں کے لیے یہ ایک راز تھا _۔ آخر شہزادی نے تیسرا سوال کر ڈالا۔ وہ تیزی سے سیڑھیاں اُتری اور تیزی سے سیڑھیاں چڑھ کر دو بارہ اپنی نشست پر بیٹھ گئ _یہ بڑا عجیب و غریب سوال تھا۔ ہر طرف خاموشی تھی۔ لوگوں کی سانسیں رُکی ہوئ تھیں _ اب تو اعظم کے ہاتھ پاؤں ٹھنڈے ہوئے جا رہے تھے _آخر اعظم کھڑا ہوا اور اپنے دل پر ہاتھ رکھ کر شہزادی کی طرف دیکھنے لگا _۔" مرحبا ، مرحبا اے نوجوان ! مبارک ہو ! شہزادی نے تمھیں پسند کر لیا ہے _ "ملکہ عالیہ کی آواز کے ساتھ ہی شہزادی ثنا شرما کر محل کے اندرونی حصے میں چلی گئ اور محل مبارک باد کی آواز سے گونج اٹھا۔ لوگ خوشی سے جھوم رہے تھے _وہ دل ہی دل میں اللّٰه کا شکر ادا کر رہا تھا ، جس نے اُسے یہ اعزاز بخشا تھا۔بادشاہ نے اعظم سے پوچھا :" اے نوجوان ! ملکہ عالیہ کو تو تم نے مطمئن کر دیا _ اب یہ بتاؤ کہ تم سے کیا پوچھا گیا تھا اور تم نے کیا جواب دیا ؟ اگر تم نے ایک بھی غلط جواب دیا تو تمھاری گردن ماردی جائے گی _ "۔اعظم پُر اعتماد انداز میں کھڑا ہوا اور بولا :" بادشاہ سلامت ! شہزادی نے ایک انگلی کھڑی کر کے پوچھا تھا کہ۔تم کیا اللّٰه کو ایک مانتے ہومیں نے دو اُنگلیاں کھڑی کر کے جواب دیا کہ۔اللّٰه اور اُس کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم پر میر ایمان اٹل ہے۔ " بہت خوب ! ہم خوش ہوئے _ "،بادشاہ نے مسکرا کر کہا۔اعظم بولا: " اس کے بعد شہزادی نے تلوار چلا کر پوچھا تھا کہ اس سے بڑا کوئ ہتھیار ہے ؟ میں نے جواب دیا ہاں ، قلم کا وار تلوار کے وار سے زیادہ کارگر ہوتا ہے _ " " ماشاءاللّٰه ! نوجوان ! تم نے ہمارا دل جیت لیا _ تم نے ثابت کر دیا کہ جا





گلگت(اوصاف نیوز) قر اقرم انٹر نیشنل یونیورسٹی میں "نصابی پڑھائی لکھائی کی مہارتیں و تحقیق کے موثر ذرائع "کے عنوان پر تین روزہ ورکشاپ کا آغاز 11ستمبر سے ہوگا۔تین روزہ ورکشاپ 11ستمبر سے 13ستمبر تک جاری رہے گا۔KIUمیں منعقدہ تین روزہ ورکشاپ کا اہتمام شعبہ ماڈرن لنگوئجز نے ہائرایجوکیشن کمیشن



     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved